ذکراللہ

May
18

ذکراللہ

حضورِ اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کا ارشادِ پاک ہے

“تمہاری زبان اللہ کے ذکر سے تَر رہا کرے “ (ترمذی)

اللہ کا ذکر ایسی آسان عبادت ہے کہ اسے انسان معمولی سی توجہ سے ہر وقت انجام دے سکتا ہے ۔ اور اس کے فضائل اور فوائد بے شمار ہیں ۔ اللہ تعالی نے قرآن مجید جا بجا اپنا ذکر کرنے کی تاکید فرمائی ہے۔ ایک جگہ ارشاد ربانی ہے “ اے ایمان والوں! اللہ تعالی کا کثرت سے ذکر کرو “


ذکر کی کثرت سے اللہ تعالی کے ساتھ تعلق مضبوط ہوتا ہے اور انسان کی روح کو غذا ملتی ہے ۔ جس سے اس میں بالیدگی اور قوت پیدا ہوتی ہے ۔روحانی قوت کے نتیجے سے نفس اور شیطان کا مقابلہ آسان ہو جاتا ہے،گناہوں سے بچنے میں سہولت ہوتی ہے۔ اور ہر ذکر کے ساتھ نامہ اعمال میں نیکیوں کا اضافہ ہوتا چلا جاتا ہے۔

تبصرہ کریں

تبصرہ فرمائیں