موضوعات برائے زمرہ ‘مذاہب ِ باطلہ’

دارالعلوم دیوبند اور ردِّشیعیت

Feb
16

ہندوستان میں اکثر مسلم سلطنتیں اور مغلیہ حکومت کے سربراہان اہل السنة والجماعةتھے؛ البتہ ملک میں کہیں کہیں شیعہ حکومتیں یا ریاستیں بھی قائم ہوئیں جن میں جون پور کی شرقی سلطنت(۱۳۹۴ء تا ۱۴۷۹ء ) اور فیض آ باد و لکھنوٴ کی اودھ حکومتیں (۱۷۲۲ء تا ۱۸۵۸ء) زیادہ نمایاں ہوئی ہیں۔ ایران کے شیعی صفوی حکومت نے ہمایوں بادشاہ کو پناہ دی اور اسے ہندوستان کی حکومت دوبارہ دلانے اور سوری بادشاہ کو شکست دینے میں بھرپور تعاون دیا۔ اس کے بعد سے شاہانِ مغلیہ کے ایران کے ساتھ اچھے مراسم رہے اور اس کی وجہ سے شیعی عناصر کا حکومت میں عمل دخل رہا۔ خصوصاً اورنگ زیب عالم گیر کے انتقال کے بعد جب مغلیہ حکومت کمزور پڑنے لگی تو ان شیعی عناصر نے حکومت کی باگ ڈور اپنے ہاتھ میں لے لی اور بادشاہ ان کے ہاتھوں کٹھ پتلی بنے رہے۔لال قلعہ میں تعزیہ داری اور شہزادوں کا اس میں پوری دل چسپی سے حصہ لینا یہ سب کچھ شیعی اقتدار کا ثمرہ تھا۔ شیعی عناصر معتدد بادشاہوں کا تختہ پلٹنے حتی کہ ان کی ایذاء و قتل کی سازشوں میں بھی شریک رہے۔ شیعوں کے دورِ عروج میں ان کے خلاف زبان کھولنا کچھ آسان نہیں تھا۔ عام مسلمانوں کا عالم یہ تھا کہ بڑے بڑے سنی جاگیر دار ان شیعہ عناصر کی دار و گیر کے خوف سے اہلِ تشیع ہونے کا اعلان و اظہار کر دیا تھا۔

          اس ماحول میں حضرت شاہ ولی اللہ دہلوی  نے اس فتنہ کا ادراک کر لیا تھا اور ”اِزالةُ الخفاء فی خلافةِ الخُلَفاء“ اور ”قرةُ العینین فی تفضیل الشیخین“ کے ذریعہ اہل السنة والجماعة کے موقف کو دلائل و براہین کے ساتھ پیش فرمایا اور دشمنانِ صحابہ پر ضرب کاری لگائی۔ حضرت شاہ صاحب کے بعد آپ کے فرزند و جانشین حضرت شاہ عبد العزیز  نے ”تحفہٴ اثنا عشریہ“ لکھ کر روافض کے سامنے ایک ایسا چیلنج کھڑا کردیا جس کا علمی جواب ان کے پاس نہ تھا۔ ان کوششوں کی وجہ سے ان حضرات کو شیعوں کے مظالم کا نشانہ بننا پڑا۔ (more…)

تبصرہ کریں

بہائی مذہب کیا ہے ؟

Apr
11

کفار کا بنایا ہوا  ایک  فرقہ بہائی مذہب کیا ہے اور اسکی حقیقت کیا  ہے انکے متعلق جاننے کے لئے   (more…)

تبصرہ کریں